مرکزی صفحہ » منشور

منشور

    1. ادارے کانام: اتحاد المدارس العربیہ پاکستان ہوگا۔
    2. مرکزی دفتر: اتحاد المدارس العربیہ پاکستان کا مرکزی دفترضلع مردان صوبہ سرحد پاکستان میں ہوگا۔
    3. اتحاد المدارس العربیہ پاکستان ایک غیر سیاسی ادارہ ہوگی۔جس کا مقصد صرف اور صرف اشاعت تعلیم ہوگا۔ اتحاد کے جملہ اراکین ملکی سیاست میں حصہ لینے سے پرہیز کریں گے۔ تمام مذہبی اور سیاسی پارٹیوں کو احترام کی نگاہ سے دیکھا جائے گا۔
    4. اتحاد المدارس کا ہرعہد یدار اس بات کی حتیٰ الامکان کوشش کریگا۔کہ اپنے اپنے حلقہ درس میں باہمی اخوت و محبت ،برداشت اور احترام انسانیت کے جذبے کو پورے خلوص سے فروغ دیگا۔اور رویوں میں تبدیلی کی کوشش پیدا کرے گا۔کیونکہ یہ بات دین اسلام کی اساس اور روح ہے۔
    5. مشاورتی کمیٹیاں دو ہوںگی۔
      1. مجلس شوریٰ
      2. مجلس عاملہ
    6. مجلس شوریٰ: اتحاد المدارس العربیہ پاکستان کی اصل قوت ہوگی۔
      1. اس کے کم از کم 20 اراکین ہوںگے۔
      2. مجلس شوریٰ کا اجلاس سال میں ایک بار منعقد ہوگا۔ اس کےعلاوہ صدر صاحب مخصوص حالات میں اجلاس طلب کرسکیں گے۔
      3. مجلس شوریٰ کے فیصلوں میں کثرت رائے کیساتھ ساتھ قوت رائے کو بھی مدنظر رکھا جائے گا۔
      4. مجلس شوریٰ میں اتحاد المدارس سے ملحقہ جامعات ومدارس کے مہتممین حضرات یا ان کے نامزد نمائندے ہوں گے۔
      5. مجلس شوریٰ کے اجلاس کے لیے تین چوتھائی اراکین کی موجودگی ضروری ہوگی۔
      6. مجلس شوریٰ اتحاد المدارس العربیہ پاکستان کےنظم و نسق کاخیال رکھے گی۔
      7. مجلس شوریٰ اتحاد المدارس کے ساتھ ملحقہ جامعات و مدارس کے تعلیمی معیار کے حوالے سے مناسب اور مفید اقدمات کرے گی۔
      8. بورڈ کے نصاب کے بارے میں مختلف ترامیم اور تجاویز مجلس شوریٰ صدر اور ناظم اعلیٰ کے مشورے سے دے سکے گی۔
      9. مجلسشوریٰ کے اراکین کا چنائو صدر اتحاد، نائب صدر، ناظم اعلیٰ اور ناظم امتحانات کریں گے۔اور مجلس شوریٰ کا معیاد کم ازکم پانچ سال کے لیے ہوگی۔
      10. نیز کسی بھی نامناسب اقدام کی وجہ سے رکن مجلس شوریٰ کومعزول کیا جاسکے گا۔
      11. صدر، ناظم اعلیٰ، نائب ناظم اعلیٰ اور ناظم امتحانات کی تقرری ومعطلی چاروں صوبائی ناظمین اعلیٰ کیساتھ ساتھ مجلس شوریٰ کے کثرت رائے سے ہوگی۔
      12. چاروں صوبوں کے ناظمین اعلیٰ کی تقرری و معطلی صدر، ناظم اعلیٰ اور ناظم امتحانات مجلس شوریٰ کے مشورے سے ہوگی۔ تقرری اچھی کارکردگی کی بنیاد پر ہوگی۔صدر اورنائب صدر کی منظوری کے بعد مذکورہ عہدیدار ان کو مرکزی دفتر مردان کی طرف سے نمائند گی کارڈ جاری کیے جائیں گے۔
      13. اتحاد المدارس کے ہمہ قسم معاملات کے حوالے سے کوئی محترم رکن کوئی قدم اٹھانا چاہے تو اس بارے  میں مرکزی دفتر کے ناظم کو اطلاع دینا ضروری ہوگا۔ جو بعد ازاں صدر، ناظم اعلیٰ اور ناظم امتحانات کومطلع کریں گے۔ کسی رکن  /عہدیدار کے انفرادی فعل کی کوئی حیثیت نہ ہوگی۔
    7. مجلس عاملہ:
      1. اتحاد المدارس کے سالانہ بجٹ کی منظوری دے گی۔
      2. مجلس عاملہ کا اجلاس سال میں ایک مرتبہ ضرور ہوگا۔
      3. مجلس عاملہ کےاراکین کی تعداد کم ازکم 30 ہوگی۔
      4. مسلسل دو اجلاسوں میں کسی معقول عذر کے بغیر شرکت نہ کرنے والے رکن کو صدر صاحب معطل کرسکیں گے۔
      5. مجلس عاملہ کےعہدیداران کی معیاد کم ازکم  پانچ سال ہوگی۔
      6. مجلس شوریٰ کے فیصلوں کا مطالعہ کریگی۔
    8. صدر کے فرائض و اختیارات :صدر کے درجذیل فرائض ہوں گے۔
      1. ارا کین مجلس شوریٰ وعاملہ کی نامزدگی ناظم اعلیٰ اور ناظم امتحانات کے مشورے سے کرے گا۔
      2. اتحاد المدارس کے اجلاسوں کی صدارت کریں گے۔
      3. اتحاد کا کوئی عہدیدار یا ملازم کسی بھی حوالے سے بورڈ کی ساکھ کو نقصان پہنچاتا ہو تو صدر اتحاد ناظم اعلیٰ اور ناظم امتحانات کے مشورے سے اْسے معطل یا اْس کی تنزلی کریں گے۔
      4. مجلس شوریٰ کے فیصلوں کی توثیق کرے گا۔
      5. صدر اتحاد ناظم اعلیٰ اور ناظم امتحانات کے مشورے سے مجلس شوریٰ کے دو اجلاسوں میں بغیر معقول عذر کےشرکت نہ کرنے والے رکن کی رکنیت ختم کرسکیں گے۔
    9. نائب صدر کے فرائض:
      1.  صدرکی عدم موجودگی میں انتظامی امور کی نگرانی اور اجلاسوں کی صدارت کرنا۔
      2. صدر کی طرف سے مفروضہ امور کو سرانجام دینا۔
    10. ناظم اعلیٰ کے فرائض:
      1. صدر اتحاد کی ہدایت کے مطابق مجلس شوریٰ اور مجلس عاملہ کے اجلاس طلب کریںگے۔
      2. مدارس /جامعات کے الحاق کے امور کی نگرانی کریں گے۔
      3. اتحاد کے جملہ اْمور صدر، ناظم اعلیٰ اور ناظم امتحانات کے باہمی مشاورت سے طے ہوں گے۔
      4. تمام مرکزی اور صوبائی عہدیداران اپنی اپنی ذمہداریوں کے حوالے سے مرکزی دفتر اتحاد المدارس العربیہ پاکستان مردان کو ماہانہ ششماہی یا سالانہ رپورٹ پیش کریں گے۔مرکزی دفتر کے ناظم صدر اتحاد اور ناظم اعلیٰ کو اس کے بارے میں حتمی رپورٹ پیش کرے گا۔
      5. ملکی سالمیت اور وقار کے خلاف کام کرنے والے عہدیدار کو صدر، ناظم اعلیٰ اور ناظم امتحانات فی الفور معطل کرنے کے مجاز ہون گے۔ ملکی قوانین و ضوابط کی عظمت کو مدنظر رکھا جائے گا۔
      6. ہمہ قسم ایجنڈا تیار کر یںگے۔
    11. ناظم امتحانات کےفرائض و اختیارات:۔
      1. اتحاد المدارس العربیہ پاکستان کے امتحانات کی نگرانی کریں گے۔ جس میں ناظم اعلیٰ کی مشاورت شامل ہوگی۔
      2. مرکزی دفتر کے نظم ونسق کی نگرانی ناظم امتحانات کریں گے۔ جسمیں ناظم اعلیٰ کی مشاورت شامل ہوگی۔
      3. ناظم امتحانات اتحاد المدارس کے جملہ امور سے صدر صاحب اور ناظم اعلیٰ کو آگاہ کریں گے۔
      4. نصاب کے اندر ضروری تبدیلی، اْسکے اندر جدید مسائل کےحل کی گنجائش اور اسے عصری تقاضوں سے ہم آہنگ کرنے کے لیے اپنی سفارشات تیار کر کے مجلس شوریٰ کو پیش کریں گے۔ جن کی بعد ازاں منظوری دی جائے گی۔
    12. ناظم مالیات کے فرائض:۔
      1. منظور شدہ میزانیہ (بجٹ ) کا سالانہ رپورٹ مجلس شوریٰ کو پیش کریں گے۔